جمعرات , اپریل 22 2021
Breaking News
Home / ملاکنڈ ڈویژن / ڈاکٹروں اور نرسنگ سٹاف کو گالیاں دینے،کے خلاف تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال درگئی نے او پی ڈی سروس بند کر دی

ڈاکٹروں اور نرسنگ سٹاف کو گالیاں دینے،کے خلاف تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال درگئی نے او پی ڈی سروس بند کر دی

درگئی (نمائندہ چاند) ڈاکٹروں اور نرسنگ سٹاف کو گالیاں دینے،نازیبا الفاظ استعمال کرنے اور سوشل میڈیا کے ذریعے بلیک میلنگ کے خلاف تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال درگئی کے ڈاکٹروں اور فیمیل نرسنگ سٹاف نے احتجاج او پی ڈی سروس بند کر دی، بے جا مداخلت اوربدنامی کرنے والوں کو تین دن کے اندر اندرگرفتار نہ کیا گیا تو او پی ڈی کیساتھ ساتھ ہسپتال ایمرجنسی اور لیبرروم بھی بند کردینگے۔او پی ڈی اور ایمرجنسی بند کرنے کا اعلان گرینڈ ہیلتھ الائنس تحصیل درگئی کے صدر ڈاکٹر ارشد حسین، ارتھوپیڈک سرجن ڈاکٹر مشتاق خان، ڈاکٹر محمد ابراہیم سلارزئی، نعیم خان، رحمت شیر اور فیمیل نرسنگ سٹاف کے عہدیدارو ں نے احتجاج کے بعد درگئی ہسپتال ہال میں ہنگامی پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ اس دوران سوشل میڈیا کے ذریعے درگئی ہسپتال کو بدنام کرنے اور مظاہرے کے دوران ڈاکٹروں اور نرسنگ سٹاف کو گالیاں دینے والوں کے خلاف نعر ہ بازی کی گئی اور ان کے فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا گیا۔ ڈاکٹر ارشد حسین، ڈاکٹر مشتاق خان اور ڈاکٹر محمد براہیم سلارزئی سمیت دیگر نے کہا کہ گذشتہ روز ایک منظم سازش کے تحت ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر عنایت اللہ صافی کو ایک مریضہ کے ڈیلیوری کیس کے حوالہ سے بار بار کال کرکے غصہ دلایا گیا اور ان کی کال ریکارڈاور ایڈیٹ کرکے سوشل میڈیا پر وائرل کردیا گیا حالانکہ اُسی روز ایم ایس چھٹی پر تھے۔ انہوں نے کہا کہ ڈپٹی کمشنر ملاکنڈ نے اسسٹنٹ کمشنر درگئی کو انکوائری افیسر مقرر کرکے پندرہ دن میں رپورٹ طلب کی لیکن اسی دوران چند نام نہاد سوشل ایکٹویسٹس نے ذاتی مقاصد کے لئے ہسپتال کے سامنے اور احاطے میں احتجاجی مظاہرہ کیا اور ہسپتال کے سرکاری امور پر میں بے جامداخلت کی اور ڈاکٹروں اور فیمیل نرسنگ سٹاف کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے گئے جس کی ویڈیوز موجود ہیں لیکن اس کے باوجود مذکورہ شخص کے خلاف کسی قسم کی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی حالانکہ یہی شخص عرصہ سے ہسپتال کے سرکاری امور میں بے جا مداخلت کرکے مختلف طریقوں اور سوشل میڈیا کے ذریعے ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کو بلیک میل کرنا چاہتے ہیں اور حالیہ واقعہ اور آڈیو کال ریکارڈنگ بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران فیمیل نرسنگ سٹاف کے عہدیداروں نے کہا کہ جب مریضہ کو ہسپتال لایا گیا تھا تو اُس مریض خاتون کے ڈیلیوری میں کافی وقت تھا لیکن مریضہ کیساتھ انے والا شخص باربار لیبر روم کے دروازے کے اندر جھانکنے اور داخل ہونے کی کوشش کرتا رہا جس پر انہیں منع کیا گیا جس نے چھٹی پر گئے ایم ایس کو بار بار کال کرکے انہیں غصہ دلایا حالانکہ ایم ایس نے ڈیلیوری کے لئے جو الفاظ استعمال کئے ہیں وہ ڈاکٹری لحاظ سے ڈیلیوری کے لئے مناسب تھے لیکن اس کے باوجود ان کی کال ریکارڈ اور ایڈیٹ کرکے نرسنگ سٹاف اور ڈاکٹروں کو بدنام اور ذاتی مقاصد کے لئے اسے سوشل میڈیا پر وائرل کیا گیا اور بعد میں اسی نام نہاد سوشل ایکٹویسٹ نے چند لوگوں کو ساتھ ملا کر ہسپتال کے احاطے اور مین روڈ پر مظاہرہ کیا اور فیمیل نرسنگ سٹاف اور ڈاکٹروں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے جس سے پورے سٹاف کی بے عزتی ہوئی ہے۔ پریس کانفرنس کے دوران گرینڈ ہیلتھ الائنس کے صدر ڈاکٹر ارشد حسین اور فیمیل نرسنگ سٹاف کے عہدیداروں نے ڈاکٹروں اور نرسوں کے ہمراہ کہا کہ مظاہرے کے دوران جس شخص نے نازیبا الفاظ استعمال کئے اور روڈ بلاک کرکے ذاتی مقاصد کے لئے ڈاکٹروں اور فیمیل نرسنگ سٹاف کو بدنام کیا انتظامیہ اس شخص کے کرتوتوں سے بخوبی واقف ہے لیکن اس کے باوجود انکے خلا ف کوئی کاروائی نہیں ہو ئی اس لئے ہمارا مطالبہ ہے کہ گالیاں دینے اور سوشل میڈیا کے ذریعے بلیک میلنگ اور بدنامی کرنے والوں کو تین دن کے اندر اندر گرفتار کیا جائے بصورت دیگر عدم گرفتاری پر او پی ڈی کیساتھ ساتھ ایمرجنسی اور لیبر روم بھی بند کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ معطل ہونے والے ایم ایس ڈاکٹر عنایت صافی کے پیشہ ورانہ خدمات سے کوئی بھی شخص انکار نہیں کرسکتا جس نے قلیل عرصہ میں درگئی ہسپتال میں ریکارڈ اصلاحات کئے ہیں لیکن اسے سازش کا نشانہ بنا کر ذاتی فوائد حاصل کرنے کی کوشش کی گئی ہے اسلئے ہمارا مطالبہ ہے کہ معطل ایم ایس کے خدمات کو مد نظر رکھتے ہوئے انہیں فی الفور بحال کیا جائے۔

About Aimal Rashid

Check Also

وکلاء برادری معاشرے میں انصاف کی فراہمی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہیں،ڈاکٹر عباد اللہ

الپوری(نمائندہ چاند)شا نگلہ سے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عباد اللہ خان نے کہا ہے کہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے