بدھ , جون 23 2021
Breaking News
Home / قومی خبریں / حکومت چلی جائے چینی مہنگی کرنے والوں کو نہیں چھوڑوں گا، عمران خان

حکومت چلی جائے چینی مہنگی کرنے والوں کو نہیں چھوڑوں گا، عمران خان

اسلام آباد (آن لائن) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کشمیر کی سابقہ حیثیت بحال ہونے تک بھارت سے مذاکرات نہیں ہو سکتے ، ‘مغربی ممالک نے بھارت کو چین کے خلاف معاشی محاذ پر تیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے لیکن بھارت تباہ ہو گا،جنہوں نے چینی مہنگی کی ان کو معاف نہیں کروں گا، چاہے میری حکومت چلی جائے، ماضی میں نواز شریف نے ڈنڈوں سے سپریم کورٹ پر حملہ کیا ،شہباز شریف بھاگنے کی کوشش کر رہے لیکن اس بار نہیں بھاگنے دیں گے، پاکستان کا بڑا مسئلہ قانون کی عدم بالادستی ہے، مافیاز کا مقابلہ کر کے دکھاؤں گا،قوم سے اپیل ہے کہ ماسک پہنیں اور سماجی فاصلے پر عمل کریں، وزرا اچھا کام نہیں کریں گے تو ٹیم بدلنی پڑے گی۔ منگل کو عوام کی جانب سے براہ راست پوچھے گئے سوالات کے جواب دیتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کورونا کی پہلی اور دوسری لہر میں قوم نے ایس او پیز پر عمل کیا، اللہ تعالیٰ نے کرم کیا اور ہم پہلی اور دوسری لہر سے کامیابی کے ساتھ نکلے، کورونا کی تیسری لہر خطرناک ہے، بھارت کے حالات سب کے سامنے ہیں، بنگلا دیش میں بھی کیسز تیزی سے اوپر جارہے ہیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ بھارت میں کیسز مزید تیزی سے بڑھتے جارہے ہیں، وہاں لوگ سڑکوں پر مر رہے ہیں، آکسیجن کی کمی ہے، خوش آئند بات ہے کہ پاکستان میں کیسز تیزی سے اوپر نہیں جارہے، قوم سے اپیل ہے کہ ماسک پہنیں اور سماجی فاصلے پر عمل کریں، عید کی چھٹیوں میں ماسک لازمی پہنیں اور لوگوں کو کورونا سے بچائیں، عوام ایس او پیز پرعمل کریں کہ لاک ڈاوَن نہ کرنا پڑے، لاک ڈاوَن سے سب سے زیادہ غریب لوگ متاثر ہوتے ہیں۔ سمندر پار پاکستانی کی جانب سے ایک سفارت کار کی شکایت پر وزیر اعظم نے کہا ‘فارن آفس متعلق گفتگو لائیو نہیں ہونی چاہیے تھی۔وزیر اعظم عمران خان نے پاکستانی سفارتخانوں میں پاکستانیوں سے خراب رویے سے متعلق اپنے بیان کی وضاحت کی کہ ایسا لگا کہ جیسے میں پورے فارن آفس کو اس کی خراب کارکردگی پر کوس رہا ہوں۔ وزیر اعظم عمران خان نے اپنے گزشتہ بیان کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ فارن آفس بہتر انداز میں کام کررہے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ مغربی ممالک کو چین کا خوف ہے، مغربی ممالک نے چین کے مقابلے میں بھارت کو لانے کا فیصلہ کیا ہے لیکن بھارت اگر چین کا مقابلہ کریگا تو وہ خود تباہ ہو جا ئے گا۔ بھارت میں مسلمانوں اور اقلتیوں پر ظلم ہو رہا ہے مقبوضہ کشمیر میں عالمی برادری کو چاہیے کہ کشمیر میں مظالم کا نوٹس لے، جب تک بھارت 5 اگست کیاقدامات کوواپس نہیں لیتا بات چیت نہیں کریں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ میں پاکستان کے ساتھ ساتھ بڑا ہوا ہوں۔ کرکٹ کی وجہ سے پوری دنیا دیکھی اور وہاں کا سسٹم دیکھا، دنیا کی تاریخ ہے کہ جو قوم اوپر گئی وہ قانون کی بالادستی کی وجہ سے اوپر گئی، بہترین معاشرے میں قانون غریب کو تحفظ دیتا ہے، ریاست مدینہ اس لیے عظیم ریاست بنی کیونکہ اس میں قانون سب کے لئے برابر تھا، سائیکل اور بھینس گائے چوری سے ملک تباہ نہیں ہوتا، جب ملک کاسربراہ اورطاقتورلوگ چوری کرتے ہیں توملک تباہ ہوجاتا ہے، ہر سال غریب ملکوں سے ایک ہزار ارب ڈالر چوری ہوکر امیرملکوں میں جاتا ہے۔ ماضی میں ایک منتخب جمہوری وزیراعظم نواز شریف کے دورمیں سپریم کورٹ پرڈنڈوں سے حملہ کیا اور جسٹس سجاد علی شاہ بے چارہ جان بچا کر وہاں سے نکلا جبکہ دیگر ججز صاحبان بچنے کے لیے بھاگتے رہے، وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں انصاف کا نظام قائم کیے بغیر ترقی نہیں کرسکتے، طاقتور کو قانون کے نیچے لانا ایک جہاد ہے، مافیا کرپٹ نظام سے فائدہ اٹھارہا ہے، شوگر سمیت دیگر مافیاز نہیں چاہتے کہ ملک میں قانون کی بالادستی قائم ہو۔ مافیاز کا مقابلے کرکے جیت کر دکھاوَں گا۔ ریا ست مدینہ میں طاقتور اور کمزور کیلئے ایک قانون تھا تحریک انصاف کی بنیاد ی ہی مساوی قانون پر رکھی گئی ۔ حضرت علی کا قول ہے کفر کا نظام چل سکتا ہے ظلم کا نظام نہیں چل سکتا ۔ ملک تب تباہ ہو تا ہے ۔ وزیر اعظم نے کہا کہ قانون کی بالادستی جنگ اس وقت شروع ہوئی جب سابق صدر جنرل پرویز مشرف نے ایک چیف جسٹس کو باہر نکالا اور مجھے فخر ہے کہ پرویز مشرف کے اقدام کیخلاف جدوجہد کی اور مجھے پابند سلاسل کردیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ دو لیڈر اپنے بڑے بڑے محلات میں رہنے کے لیے بیرون ملک فرار ہوگئے تھے۔عمران خان نے کہا کہ ہم قانون کی بالادستی چاہتے ہیں اس لیے نیب اور عدلیہ کے معاملات اور امور میں مداخلت نہیں کرتے۔ جسٹس منیر کے فیصلے سے قانون کی بجائے طاقت کی حکمرانی آئی ہم قانون کی با لا دستی چا ہتے ہیں طاقتور کو قانون کے زیر سایہ لانا جہاد کے برابر ہے جو مافیاز بیٹھے ہیں وہ کبھی بھی نہیں چاہے گا کہ ملک میں قانون کی با لا دستی ہو۔ وزیراعظم نے کہا کہ عمران خان نے کہا کہ سارے بڑے شہروں میں پانی کا مسئلہ آنے والا ہے، کراچی میں پانی مسئلہ بہت سنگین ہے، شہر تیزی سے پھیل رہے ہیں، بغیر ماسٹر پلان کے جب شہر پھیلتے جائیں گے تو پانی کا مسئلہ پیدا ہوگا، شہروں کے ماسٹر پلان بنا رہے ہیں، راوی کے اوپر جھیل بنا رہے ہیں، دنیا میں گھر بنانے کیلئے بینک پیسے دیتے ہیں، حکومت ہر گھر پر 3 لاکھ روپے سبسڈی دے رہی ہے، ایک خاص بینک بنایا جائے گا جو صرف گھر بنانے کیلئے قرضہ دے گا۔وزیراعظم نے عوام کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اربوں روپے کی سرکاری زمین واگزار کرائی ہے، سابق وزیر اور ایم پی ایز قبضوں میں ملوث تھے، مریم نواز قبضوں میں ملوث ایک رکن اسمبلی کے ساتھ کھڑی ہوگئیں، جو انتقامی کارروائی کا شور کر رہے ہیں وہ عدالت کیوں نہیں جاتے؟۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ چھوٹے ڈاکو سے لوگ تنگ ہوتے ہیں لیکن ملک تباہ نہیں ہوتا، حکمرانوں کی کرپشن سے ملک تباہ ہو جاتا ہے۔

About Aimal Rashid

Check Also

ملک میں کورونا سے مزید 27 افراد جاں بحق ہوگئے

اسلام آباد(آن لائن) ملک میں کورونا وائرس سے مزید 27 افراد جاں بحق ہوگئے جب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے